مریم نواز کے مقابلے میں پنجاب کے ایک اہم سیاسی گھرانے کی خاتون ملک میں ہونے والے اگلے عام انتخابات کے لیئے میدان میں آگئیں۔

ملک میں ہونے والے اگلے عام انتخابات 2018 کے لیئے ابھی سے تیاریاں شروع ہو گئیں، سیاسی پنڈتوں نے میدان لگا لیئے ہیں اور اپنے لیئے انتخابات لڑنے کے لیئے سیاسی حلقوں کی تلاش پر کام شروع کر دیا ہے۔ ذرائع کے مطابق اگلے عام انتخابات میں پنجاب کے سیاسی گھرانے سے پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق وزیر اعلی پنجاب منظور وٹو کی صاحبزادی جہاں آرا کو میدان میں اتارنے کی تیاریاں کر لی گئی ہیں۔ مریم نواز کے اگلے عام انتخابات میں قومی اسمبلی کی نشست پر انتخاب لڑنے کے لیئے مسلم لیگ ن کی طرف سے کئی حلقوں پر سوچ بچار ہو رہی ہے جن میں سے ایک حلقہ اوکاڑہ بھی ہے۔ اسی سلسلے میں پچھلے دنوں وزیراعظم نواز شریف نے اوکاڑہ میں ایک جلسے میں اوکاڑہ کے لیئے کئی ترقیاتی کاموں کا اعلان بھی کیا۔ پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والے منظور وٹو بھی اوکاڑہ کے اسی حلقے سے تعلق رکھتے ہیں جن کی صاحبزادی جہاں آرا اس بار اس حلقے سے انتخاب لڑنے کا ارادہ رکھتی ہیں۔ جہاں آرا اس حلقے میں ابھی سے کافی سرگرم ہو گئی ہیں اور مریم نواز کے بھی اسے حلقے سے انتخاب لڑنے کی صورت میں اگلے عام انتخابات میں اس حلقے میں کانٹے کا مقابلہ ہونے کے لیئے انتخابی میدان سجے گا۔ مریم نواز کے لیئے جہاں آرا آسان حریف نہیں ہوں گی۔ واضح رہے کہ محترمہ بے نظیر بھٹو کے دور میں پیپلز پارٹی کی وفاق میں حکومت کے وقت منظور وٹو نے پیپلز پارٹی کے پاس صرف 11 نشستوں کے بل بوتے پر مسلم لیگ کی اکثریتی نشستیں ہونے کے باوجود پنجاب میں وزارت اعلی حاصل کی تھی۔

حصہ