مخبریاں

تحریر : عابد ایوب اعوان

ہمارا ایک باخبر اور پکا مخبر کچھ اندر کی اہم خبریں لے کر آیا ہے جس کے مطابق
آج پانامہ کیس فیصلے میں وزیر اعظم نواز شریف نااہل نہیں ہوں گے مگر جو کمیشن تشکیل ہو گا وہ بہت طاقتور اور اہمیت کا حامل ہو گا جسکا کام صرف رپورٹ پیش کرنا نہیں ہو گا بلکہ سزا اور جزا کا بھی مکمل اختیار رکھنے والا کمیشن تشکیل ہو گا۔ یہ کمیشن وزیر اعظم نواز شریف کیلیئے کافی پریشانی پیدا کر سکتا ہے۔ اس کے علاوہ اس کمیشن کی تشکیل سے ملکی تفتیشی اداروں نیب وغیرہ کی بھی سختی آجانی ہے۔ سیاست میں مفاہمت کے گرو ذرداری نے کچھ دن پہلے وزیراعظم ہاوس کی ایک اہم شخصیت سے کہا ہے کہ پانامہ فیصلے کے بعد ن لیگ کمزور ہونا شروع ہو جائیگی اور ن لیگ کی حالت ٹوٹی ہوئی تسبیح کے دانوں کی طرح ہو گی اور ٹوٹی ہوئی اس تسبیح کے یہ دانے پنجاب میں ان کے کام آئیں گے۔
یہ تو ہو گئی پانامہ کیس کے فیصلے کی مخبری رپورٹ۔ اب آتے ہیں ایک اور اہم معاملے ڈان لیکس پر۔ اطلاع کچھ اسطرح کی ہے کہ ڈان لیکس کے لکھے ہوئے فیصلے کو وردی والوں نے ماننے سے کھلی ناں کہہ دی ہے۔ ن لیگ کیلیئے ڈان لیکس معاملہ بھی پانامہ کے بعد ایک بڑی پریشانی کا سبب بننے والا ہے۔
وزیر اعظم نواز شریف کے صاحبزادے حسن نواز اور حسین نواز برطانیہ کی شہریت رکھتے ہیں اور لندن فلیٹ کے مالک ہیں جبکہ نواز شریف کو بھی برطانیہ پسند ہے اور علاج کیلیئے بھی وزیر اعظم لندن کا ہی رخ کرتے ہیں تو برطانیہ کی وزیر اعظم ٹریسامے نے برطانیہ میں پارلیمنٹ سے منظوری کے بعد برطانیہ میں وقت سے پہلے انتخابات کا اعلان کر دیا ہے۔ وزیر اعظم نواز شریف بھی ہو سکتا ہے کمیشن کے دباو اور پریشانی میں مبتلا ہو کر ملک میں آئندہ انتخابات کیلیئے وقت سے پہلے اعلان کر سکتے ہیں۔
پاک فوج کے سپہ سالار سے کپتان کی ملاقات کے علاوہ ایک اوراہم شخصیت بھی ملاقات کا شرف حاصل کر چکی ہے اور اس ملاقات کے اثرات بھی جلد رونما ہونا شروع ہوں گے۔

حصہ